پھالیہ شہر میں آج کل ایک نیا ایشو چل رہا دو گروپ آمنے سامنے

پھالیہ شہر میں آج کل ایک نیا ایشو چل رہا ہے دو گروپ آمنے سامنے آ رہے ہیں ایک پھالیہ پریس کلب خصوصا پھالیہ پریس کلب کے صدر ظفر عباس انجم صاحب دوسرا پھالیہ میں نئ آنے والی پاکیزہ نامی کمپنی جس نے پھالیہ شہر میں مختلف پروجیکٹ لانچ کر رکھے ہیں اور مستقبل میں مزید پروجیکٹس لانچ کرنے کا اعلانات کر رہے ہیں

خیر پاکیزہ گروپ آف کمپنی کے دو مین پروجیکٹس ہیں کہ جس میں سے ایک پاکیزہ ہاؤسنگ سوسائٹی بنائی ہے جو سینکڑوں ایکٹر پر مشتمل ہے دوسرا پھالیہ شہر میں عالمی معیار کا شاپنگ مال بنانے کا اعلان کیا ہے اور اس پر کام شروع ہے کھدائی کر دی گئ ہے.. یہ پاکیزہ نامی شاپنگ مال دو ایکٹر رقبے پر مشتمل ہو گا جہاں پر پہلے ایک رائس مل قائم تھی خیر شاپنگ مال بنانے والی انتظامیہ نے اعلان کر رکھا ہے کہ یہ ضلع کا پہلا اور واحد عالمی معیار کا شاپنگ مال ہو گا جس میں بسیمنٹ بھی بنایا جائے گا

اور بسیمنٹ سے اوپر پندرہ منزلہ عمارت تعمیر کی جائے گئ انتظامیہ کے مطابق شاید پنجاب کا چوتھا بڑا شاپنگ مال ہو گا لیکن اس بارے میں عوام میں بڑی غلط فہمیاں پائی جا رہی ہیں کیوںکہ پریس کلب اور پاکیزہ گروپ کے درمیان لفظی گولہ بازی زور شور سے جاری ہے اور عوام منتظر ہیں کہ اونٹ کس کروٹ بیٹھتا ہے خیر پریس کلب کے ممبران خصوصا ظفر عباس انجم صاحب نے پاکیزہ گروپ کے ایک ڈائریکٹر سے سوشل میڈیا پر بڑا ٹاکرہ چل رہا ہے

لیکن ابھی تک کوئی بات بنتی نظر نہیں آ رہی شاید ظفر عباس انجم صاحب کی خواہش ہے کہ معاملہ اچھے طریقے سے حل ہو کہ کہیں اس کمپنی میں سود کا دھندہ تو نہیں چل رہا کیا پاکیزہ گروپ نامی کمپنی پھالیہ شہر کے باسیوں کے ساتھ ڈبل شاہ والی گیم تو نہیں کر رہے خیر پاکیزہ کمپنی کے سی ای او ملک محمد حسنین صاحب اعلان کر چکے ہیں کہ میرا کاروبار سود فراڈ اور ڈبل شاہ والی گیم سے مکمل پاک ہے.


لیکن پاکیزہ گروپ آف کمپنی کے ایک ڈائریکٹر شاہد عالم نامی شخص شاید کم عقل انسان ہیں جو سوشل میڈیا پر آ کر ایک نئ بات کر جاتے ہیں اور پھر خود ہی اس میں پھنس جاتے ہیں اس طرح سے یہ لفظی جنگ جاری ہے اللہ پاک کرے یہ جنگ لفظی ہی رہے اس سے آگے نہ جائے اور معاملہ افہام و تفہیم سے حل کیا جائے تا کہ معاملہ ختم ہو اور لوگوں کے درمیان پائی جانے والی بے یقینی کی صورت حال ختم ہو ظفر عباس انجم صاحب نے پاکیزہ گروپ آف کمپنی کو آفر کی کہ وہ پریس کلب پھالیہ تشریف لائیں

اور آ کر لائیو ہمارے سوالات کے جوابات دیں جس کو پاکیزہ گروہ آف کمپنی کے ڈائریکٹر ملک محمد حسنین صاحب نے قبول کیا لیکن ایک ڈائریکٹر شاہد عالم نے پھر روایتی کم عقلی کا سامنا کرتے ہوئے ایک ویڈیو وائرس کی جس میں پھر موصوف خود ہی پھنس گئ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *